غیرت مند ۔۔۔ وقاص افضل

بہن سے اجنبی کا گا ئوں کی کچی سڑک پر بات کرنا برداشت نہ کر سکا
ٹوکے کا وار خطا گیا،شدید زخمی ،ہسپتال میں جانبر ہو گیا
مقدمہ چلا
باپ نے خمیدہ کمرمزید جھکاتے ہوئے لرزتے ہا تھو ں کے ساتھ پنچا ئیت سامنے دستا ر رکھ دی
ماں نے چودھرائن کے پاوں پکڑ لیے
زمین گروی رکھ کر مقدمہ لڑا
بہنو ں نے تھا نے ،کچہر ی میں پیروی کی
تیس ما ہ بعد رہا ئی ملی
مونچھ کو تا ئو دیتا،دوستو ں کے کندھوں پر ہا تھ رکھ کر اکڑ کر چلتا، گا ئوں میں دا خل ہو ا
تو عقب سے کسی نے صدا لگا ئی
’’غیرت مند ‘‘

Leave Comments

آج کی بات

انسان حالات کی پیداوار نہیں،حالات انسان کی پیداوارہوتے ہیں۔
{کتاب۔کوئی کام نا ممکن نہیں۔سے اقتباس}