انتخاب

  • بچوں کا رویہ کیسے بدلا جاسکتا ہے ؟ ۔۔۔ جیمس پاو -ترجمہ :محمد اویس سندھو

    Share this on WhatsAppاس کتاب کا ایک بنیادی نکتہ یہ ہے کہ والدین اور اساتذہ کے پاس طاقت کا ایک ایسا وسیع ذخیرہ ہے جس سے وہ بڑے پر اثر انداز سے بچے کا رویہ بدل سکتے ہیں۔ کئی والدین اس بات کی کوشش تو ضرور کرتے ہیں مگر وہ […]

    مزید پڑھیں
  • ﺍﺭﺩﻭ ﺍﻟﻔﺎﻅ ﮐﺎ ﺩﺭﺳﺖ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ۔۔۔ شورش کشمیری

    Share this on WhatsApp*ﺁﻏﺎ ﺷﻮﺭﺵ ﮐﺎﺷﻤﯿﺮﯼ ﻣﺮﺣﻮﻡ* ﺟﺎﻧﻮﺭﻭﮞ ﮐﮯ ﺑﭽﮧ ﮐﻮ ﮨﻢ ﺑﭽﮧ ﮨﯽ ﮐﮩﺘﮯﮨﯿﮟ  مثلاً ﺳﺎﻧﭗ ﮐﺎ ﺑﭽﮧ ، ﺍﻟﻮ ﮐﺎ ﺑﭽﮧ، ﺑﻠﯽ ﮐﺎ ﺑﭽﮧ، *ﻟﯿﮑﻦ ﺍﺭﺩﻭ ﻣﯿﮟ* ﺍﻥ ﮐﮯ لئے ﺟﺪﺍ ﺟﺪﺍ ﻟﻔﻆ ﮨﯿﮟ ۔ ﻣﺜﻼً : ﺑﮑﺮﯼ ﮐﺎ ﺑﭽﮧ : ﻣﯿﻤﻨﺎ ﺑﮭﯿﮍ ﮐﺎ ﺑﭽﮧ : ﺑﺮّﮦ ﮨﺎﺗﮭﯽ […]

    مزید پڑھیں
  • چائے کا مرثیہ — ابو اکلام آزاد

    Share this on WhatsAppچائے چین کی پیداوار ہے اور چینیوں کی تصریح کے مطابق پندرہ سو برس سے استعمال کی جارہی ہے لیکن وہاں کبھی کسی کے خواب و خیال میں بھی یہ بات نہیں گزری کہ اس جوہرِ لطیف کو دودھ کی کثافت سے آلودہ کیا جاسکتا ہے۔ سترہویں […]

    مزید پڑھیں
  • زیادہ بگڑے ہوئے بچے کی تربیت کیسےکریں؟ ۔۔۔ جیمس پاو -ترجمہ :محمد اویس سندھو

    Share this on WhatsAppتعلیم وتربیت ہر بچے کا بنیادی حق ہے اور والدین کا بنیادی فرض ہے کہ وہ اپنے بچوں کی بہترین تعلیم وتربیت کریں ۔کچھ بچے پیدائشی طور پر اور کچھ بچے ماحول کی خرابی کی وجہ سے بگڑ جاتے ہیں تو ایسے بچوں کی تربیت والدین اور […]

    مزید پڑھیں
  • حافظہ کے فطری قوانین — ڈیل کارنیگی – ترجمہ -محمد احسن

    Share this on WhatsAppنامور ماہر نفسیات پروفیسر کارلؔ سیشور نے کہا تھاکہ’’ ایک عام شخص اپنی اصلی قوت حافظہ کو دس فی صد سے زیادہ استعمال نہیں کرتا۔ فطری قوانین حافظہ کی خلاف ورزی کرکے وہ نوے فی صد قوت حافظہ ضائع کردیتا ہے‘‘۔ آپ بھی انہیں عام آدمیوں میں […]

    مزید پڑھیں
  • مزدوری —سعادت حسن منٹو

    Share this on WhatsAppمزدوری لُوٹ کھسوٹ کا بازار گرم تھا۔ اس گرمی میں اِضافہ ہو گیا جب چاروں طرف آگ بھڑکنے لگی۔ ایک آدمی ہارمونیم کی پیٹی اُٹھائے خوش خوش گاتا جا رہا تھا۔ “جب تم ہی گئے پردیس لگا کے ٹھیس، او پیتم پیارا، دُنیا میں کون ہمارا۔” ایک […]

    مزید پڑھیں
  • معصوم بچہ —منشی پریم چند

    Share this on WhatsApp گنگو کو لوگ برہمن کہتے ہیں اور وہ اپنے کو برہمن سمجھتا بھی ہے۔ میرے سائیں اور خدمتگار مجھے زور سے سلام کرتے ہیں، گنگو مجھے کبھی سلام نہیں کرتا۔ وہ شاید مجھ سے پالاگن کی توقع رکھتا ہے۔ میرا جھوٹا گلاس کبھی ہاتھ سے نہیں […]

    مزید پڑھیں
  • مہا لکشمی کا پل —کرشن چندر

    Share this on WhatsAppکرشن چندر مہا لکشمی کے اسٹیشن کے اس پار لکشمی جی کا ایک مندر ہے۔ اسے لوگ ریس کورس بھی کہتے ہیں۔ اس مندر میں پوجا کرنے والے ہارتے زیادہ ہیں جیتتے بہت کم ہیں۔ مہا لکشمی سٹیشن کے اس پار ایک بہت بڑی بدرو ہے جو […]

    مزید پڑھیں
  • کپاس کا پھول —احمد ندیم قاسمی

    Share this on WhatsAppیہ بڑا عجیب منظر تھا۔ رات کے اندھیرے میں صبح ہولے ہولے گھل رہی تھی۔ چڑیاں ایک دوسرے کو رات کے خواب سنان لگی تھیں۔ بعض پرندے پر ہلائے بغیر فضا میں یوں تیر رہے تھے جیسے مصنوعی ہیں اور کوک ختم ہوگئی تو گر پڑیں گے۔ […]

    مزید پڑھیں
1 2 3

آج کی بات

انسان حالات کی پیداوار نہیں،حالات انسان کی پیداوارہوتے ہیں۔
{کتاب۔کوئی کام نا ممکن نہیں۔سے اقتباس}