اردو ادب

  • اردو کا مقدمہ ۔۔۔ فرخ سہیل گوئندی

    Share this on WhatsAppہمارے ہاں اردو کے نفاذ کا معاملہ برصغیر کی آزادی کے ساتھ ہی شروع ہوگیا اور آغاز بھی تلخ ہوا۔ مشرقی پاکستان میں علیحدگی کے بیج اسی مہم کے سبب پنپنا شروع ہوئے۔ اردو کو برصغیر میں مسلمانوں کی شناخت کے طور پر پیش کیا جاتا ہے۔ […]

    مزید پڑھیں
  • زبان و بیان — پروفیسر لیاقت علی عظیم

    Share this on WhatsAppزبان و بیان 1.ایک لفظ ہے جبریل۔ بہت سے لوگ اسے غلط لکھتے ہیں ۔یہ لفظ جبرآئیل نہیں ہے بلکہ اصل لفظ جبریل ہےیعنی یہ پانچ حروف ہیںجیسے ج ب ر ی ل ۔یعنی JIBREEL ۔جبکہ لفظ جبرآئیل میں سات حروف ہیں۔ سب سے اہم بات یہ […]

    مزید پڑھیں
  • ترقی ۔۔۔ وقاص اٖفضل

    Share this on WhatsAppوہ اردو اور انگلش پڑھ سکتا تھا کام کے دوران نظریں میرے لیپ ٹاپ کی سکرین پر رہتیں اکثر اُس کا ایک جملہ میری سارے دن کی تحقیق پرحاوی ہوتاآذ معا شی ترقی کا درست اندازہ کیسے کیا جا سکتا ہے ؟ ترقی پذیر ممالک میں ترقی […]

    مزید پڑھیں
  • صندوق ۔۔۔ محمد انس حسان

    Share this on WhatsAppشہرکے عقبی حصہ میں مزدوروں کی بستی تھی اور اس بستی کے ایک تنگ و تاریک مکان میں شاکر علی اپنے چار بچوں اور بیوی کے ساتھ رہتا تھا۔ وہ شہر کی ایک ٹکسٹائل مل میں کام کرتا تھا وہ بہت ہی سیدھا سادا، ایماندار اور شریف […]

    مزید پڑھیں
  • آھٹ — انس بلال چودھری

    Share this on WhatsAppچودھری رفیق کی اب ساتھ والے عالقوں میں بھی دھوم کافی مچ چکی تھی وہ اپنے گاوں کا امیر ترین آدمی تھا۰جس نے عرصہ دراز قبل اس گاوں میں ڈیرا ڈاال تھا اور دیکھتے ہی دیکھتے بہت مربعوں کا مالک بن چکا تھا۰اسکا چھوٹا سا خاندان تھا […]

    مزید پڑھیں
  • مزدوری —سعادت حسن منٹو

    Share this on WhatsAppمزدوری لُوٹ کھسوٹ کا بازار گرم تھا۔ اس گرمی میں اِضافہ ہو گیا جب چاروں طرف آگ بھڑکنے لگی۔ ایک آدمی ہارمونیم کی پیٹی اُٹھائے خوش خوش گاتا جا رہا تھا۔ “جب تم ہی گئے پردیس لگا کے ٹھیس، او پیتم پیارا، دُنیا میں کون ہمارا۔” ایک […]

    مزید پڑھیں
  • معصوم بچہ —منشی پریم چند

    Share this on WhatsApp گنگو کو لوگ برہمن کہتے ہیں اور وہ اپنے کو برہمن سمجھتا بھی ہے۔ میرے سائیں اور خدمتگار مجھے زور سے سلام کرتے ہیں، گنگو مجھے کبھی سلام نہیں کرتا۔ وہ شاید مجھ سے پالاگن کی توقع رکھتا ہے۔ میرا جھوٹا گلاس کبھی ہاتھ سے نہیں […]

    مزید پڑھیں
  • مہا لکشمی کا پل —کرشن چندر

    Share this on WhatsAppکرشن چندر مہا لکشمی کے اسٹیشن کے اس پار لکشمی جی کا ایک مندر ہے۔ اسے لوگ ریس کورس بھی کہتے ہیں۔ اس مندر میں پوجا کرنے والے ہارتے زیادہ ہیں جیتتے بہت کم ہیں۔ مہا لکشمی سٹیشن کے اس پار ایک بہت بڑی بدرو ہے جو […]

    مزید پڑھیں
  • بھوک —آصف اقبال

    Share this on WhatsAppبھوک “ابے اس اشارے پر ساری آبادی رک رک کے چلتی ہےاب۔ ۔ ایک دفعہ گاڑی قطار میں لگ جائے تو چار دفعہ تو اشارہ بند ہو ہی جاتاہے۔ اتنی گاڑیوں کی قطار میں تیرے سے پانچ سو روپے اکٹھے نہیں ہوتے ۔۔۔ بکواس کرتا رہتا ہے […]

    مزید پڑھیں

آج کی بات

انسان حالات کی پیداوار نہیں،حالات انسان کی پیداوارہوتے ہیں۔
{کتاب۔کوئی کام نا ممکن نہیں۔سے اقتباس}